پہلے بھی کہا تھا کہ کٹھ پتلیوں سے کام نہیں چلے گا ۔ آصف علی زرداری

Asif Ali Zardari
4

مانیٹئرنگ ڈیسک (24 گھنٹے)

“puppets

سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ ہم نے پہلے بھی کہا تھا کہ کٹھ پتلیوں سے کام نہیں چلے گا۔

وہ ٹنڈوالہ یار میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کررہے تھے سابق صدر آصف علی زرداری نے عمران خان کو غیر سنجیدہ وزیرِاعظم کہتے ہوئے کہا کہ ان سے ملک نہیں سنبھالا جارہا۔

آصف علی زرداری نے کہا کہ ان سے ملک چل بھی نہیں سکتا کیونکہ ان کے پاس سیاسی سوچ نہیں ہے جبکہ یہ لوگ اس معاملے میں نہ سمجھ بھی ہیں۔

سابق صدر نے کسی کا نام لیے بغیر کہا کہ ان کی بڑی کوشش ہے کہ وہ کسی طریقے سے نظام توڑ دیں۔

انہوں  نے کہا کہ اگر حکومت کو کوئی خطرہ ہوا تو وہی ان کی مدد کریں گے جو ان کو اقتدار میں لے کر آئے ہیں۔

جب ایک صحافی نے قبل ازوقت انتخابات کی بات کی تو ان کا کہنا تھا کہ الیکشن کے بارے میں میں ابھی کچھ نہیں کہہ سکتا۔

پی پی پی کے شریک چیئرمین کا کہنا تھا کہ ان کے دورِ حکومت میں ہی آئین کو اس کی اصل شکل میں بحال کیا گیا لیکن موجودہ تحریک انصاف کی حکومت 18ویں ترمیم کے ذریعے 1973 کے آئین کو ختم کرنا چاہتی ہیں۔

حکومتی اقدامات پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ گورنر ہاؤس میں چاہے کچھ بھی بنادیا جائے لیکن اس کی حفاظت کے لیے بھی دیواروں کی ضرورت تو پڑے گی۔

جعلی اکاؤنٹس کیس کے حوالے سے بات کرتے ہوئے سابق صدر نے کہا کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) نے پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کو تفتیش کے لیے طلب نہیں کیا۔

انہوں نے واضح کیا کہ جے آئی ٹی نے انہیں اور فریال تالپور کو سوالات و جوابات کے لیے طلب کیا تھا۔

آصف علی زرداری نے کہا کہ ماضی میں بھی پیپلز پارٹی کے خلاف بہت سی سازشیں ہوئیں، ہم میں جیل جانے کا صبر اور برداشت ہے، کیا عمران خان جیل جاسکتے ہیں؟

جواب چھوڑیں