Media Group,Web News Tv,Fashion Magazine, Pakistan, Webtv,livetv

انعام کا اعلان کیا مگر نہ دیا: اسٹریٹ چائلڈ فٹبال ٹیم نے بلاول کو وعدہ یاد دلادیا

Pakistan Street Football Team
36

ویب ڈیسک(24گھنٹے)

Football

پاکستان کی اسٹریٹ چائلڈ فٹبال ٹیم نے فائنل تک رسائی کے بعد پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو اور پارٹی رہنما شیری رحمان کی وعدہ خلافی یاد دلادی۔

پاکستان کی اسٹریٹ چائلڈ فٹبال ٹیم نے روس کے شہر ماسکو میں ہونے والے اسٹریٹ چائلڈ فٹبال ورلڈکپ کے فائنل تک رسائی حاصل کی جس میں ٹیم کو ازبکستان سے شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

اسٹریٹ چائلڈ فٹبال ٹیم کی فائنل تک رسائی کو سراہا جارہا ہے اور ایسے میں ٹیم نے کسی بھی انعام کے اعلان سے قبل پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کو ان کی وعدہ خلافی یاد دلا دی ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ’فٹبال پاکستان ڈاٹ کام‘ کے پیج پر ٹوئٹ میں 4 سال قبل لی گئی اسٹریٹ چائلڈ فٹبال ٹیم کی تصویر شیئر کی گئی ہے جس میں پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو، ان کی ہمشیرہ بختاور بھٹو زرداری اور پارٹی رہنما شیری رحمان بھی موجود ہیں۔

تصویر میں چیئرمین پیپلزپارٹی اور شیری رحمان کو مخاطب کرکے ان کا وعدہ یاد دلاتے ہوئے کہا گیا ہےکہ اسٹریٹ چائلڈ ورلڈکپ کا جو بھی نتیجہ آیا مگر بلاول بھٹو اور شیری رحمان کھلاڑیوں کے ساتھ تصویر نہ بنوائیں اور کسی انعام کا بھی اعلان نہ کریں کیونکہ آپ نے چار سال پہلے کیا گیا وعدہ اب تک پورا نہیں کیا۔

اس حوالے سےمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اس وقت کے اسٹریٹ چائلڈ فٹبال ٹیم کے کوچ عبدالراشد نےکہا کہ پچھلی بار سندھ اسمبلی میں ہم سے دو دو لاکھ روپے انعام اور نوکری دینے کا وعدہ کیا گیا تھا جو پورا نہیں ہوا۔

انہوں نے بتایا کہ اس وقت صوبائی وزیر روبینہ قائم خانی نے نوکری دینے کا بھی اعلان کیا تھا جو نہیں دی گئی جب کہ بلاول نے فٹبالر میراڈونا کو بھی پاکستان بلانے کہا تھا۔

عبدالراشد نے اپیل کی پچھلے سال بھی ہم نے پاکستان کی نمائندگی کی لہٰذا جو نوکری اور انعامات کے اعلان کیے گئے وہ پورے کیے جائیں۔

دوسری جانب جیونیوز نے اس حوالے سے شیری رحمان سے بھی رابطہ کرکے انہیں وعدہ خلافی سے آگاہ کیا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر شیری رحمان نےکہا کہ بہت افسوس ہے وعدہ پورا نہیں کیا گیا، ابھی ایک میٹنگ میں بلاول بھٹو کو یہ بات یاد دلائی ہے اس پر پارٹی چیئرمین نے فوری طور پر اس وعدے کو پورا کرنے کا کہا ہے جو کچھ دنوں میں پورا کردیاجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ہم اس طرح کے وعدے نہیں کرتے اور یہ طریقہ نہیں، یہ غفلت ہوئی ہے یہ وعدے پورے ہونے چاہئیں۔

جواب چھوڑیں