مصری حکومت سابق صدر مرسی کے قتل کی ذمہ دار ہے ۔ طیب اردوان

rajab tayyab erdogan
16

مانیٹئرنگ ڈیسک استنبول (24 گھنٹے )

Morsi Death

ترکی کے صدر رجب طیب اردوان نے کہا ہے  کہ سابق صدر محمد مرسی کی موت کے ’مجرم‘ مصری حکومت کو عالمی عدالت میں لے جائیں گے۔

استنبول میں انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مصر کے سابق صدر محمد مرسی کمرہ عدالت میں 20 منٹ تک مدد کے لیے ہاتھ ہلاتے رہے لیکن حکام نے توجہ نہیں دی۔

انہوں نے کہا کہ ’میں اس لیے کہتا ہوں کہ محمد مرسی مرے نہیں بلکہ انہیں قتل کیا گیا‘۔رجب طیب اردوان نے اسلامی تعاون کونسل (او آئی سی) سے مطالبہ کیا کہ وہ محمد مرسی کے قتل پر سخت اقدام اٹھائے۔

انہوں نے کہا ’ہم، بطورترکی، اس مسئلے کو زندہ رکھیں گے اور محمد مرسی کے قتل کے جرم میں مصرکی حکومت کو عالمی عدالت میں لے جائیں گے‘۔

ترکی کے صدر نے محمد مرسی کو شہید کا لقب دیا اور کہا مجھے یقین ہے کہ محمد مرسی کی موت قدرتی وجوہات کے سبب نہیں تھی

رجب طیب اردوان نے مزید کہا کہ وہ مذکورہ معاملہ رواں ماہ کے اواخر میں منعقد ہونے والے جی 20 سمٹ میں اٹھائیں گے۔واضح رہے کہ مصر کے سابق صدر محمد مُرسی 17 جون کو کمرہ عدالت میں انتقال کر گئے تھے۔

عدالتی ذرائع کے مطابق محمد مرسی عدالت میں موجود پنجرے نما سیل میں بند تھے جہاں انہوں نے کچھ دیر جج سے گفتگو کی، سابق صدر نے جج سے تقریباً 20 منٹ تک بات کی، اس کے بعد وہ بے ہوش ہوگئے جس پر انہیں ہسپتال لے جایا گیا جہاں وہ دم توڑ گئے

جواب چھوڑیں