Media Group,Web News Tv,Fashion Magazine, Pakistan, Webtv,livetv

کراچی: کمسن طالبہ سے مبینہ زیادتی کی کوشش کرنیوالا اسکول چوکیدار گرفتار

Karachi
65

 کراچی(24گھنٹے)

کراچی کے علاقے ابراہیم حیدری میں مبینہ طور پر اسکول کے چوکیدار نے 5 سالہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی جسے اہلخانہ نے مار پیٹ کے بعد رینجرز کے حوالے کردیا۔

قصور واقعے کے بعد ملک بھر میں جنسی درندوں سے بچوں کی حفاظت سے متعلق نئی بحث چھڑ گئی اور میڈیا پر بھرپور کوریج کے بعد ایک کمسن طالبہ نے مبینہ طور پر چوکیدار کی جانب سے زیادتی کی کوشش کا ذکر اپنے والدین سے کیا۔

علی الصبح ابراہیم حیدری میں واقع نجی اسکول کے چوکیدار کو کمسن طالبہ کے رشتہ داروں نے زد و کوب کے بعد رینجرز اہلکاروں کے حوالے کردیا۔

5 سالہ طالبہ کے اہلخانہ کا کہنا ہے کہ اسکول کے چوکیدار نے گزشتہ روز ان کی بیٹی سے زیادتی کی کوشش کی جس کے بتانے پر آج چوکیدار کو اسکول سے پکڑا۔

ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کا کہنا ہے کہ بچی سے مبینہ زیادتی کا واقعہ گزشتہ روز پیش آیا تاہم اہلخانہ نے تھانے میں رپورٹ کرائے بغیر اسکول میں موجود چوکیدار کو تشدد کا نشانہ بنایا۔

ڈی آئی جی ایسٹ سلطان خواجہ کا کہنا ہے کہ بچی اور والدین کی نشاندہی پر چوکیدار کو اسکول سے گرفتار کرلیا گیا ہے جس سے تحقیقات کی جارہی ہے۔

ڈی آئی جی ایسٹ کے مطابق بچی کی میڈیکل رپورٹ ابھی آنا باقی ہے تاہم اگر زیادتی یا اس کی کوشش کی گئی ہے تو اس کا مقدمہ درج کیا جائے گا۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور آئی جی پولیس نے ابراہیم حیدری میں بچی سے مبینہ زیادتی کا نوٹس لے لیا۔

ترجمان وزیراعلیٰ ہاؤس کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ نے فوری تحقیقات کر کے سخت کارروائی کا حکم دیا ہے جب کہ آئی جی سندھ نے ڈی آئی جی ایسٹ سے تفصیلی انکوائری رپورٹ طلب کرلی۔

خیال رہے کہ چند روز قبل پنجاب کے ضلع قصور میں 7 سالہ بچی کو مبینہ زیادتی کے بعد قتل کیا گیا جس کی لاش کوڑے کے ڈھیر سے ملی اور ملزم کی سی سی ٹی وی فوٹیج منظر عام پر آنے کے باوجود اسے اب تک گرفتار نہیں کیا جاسکا۔

جواب چھوڑیں